تازہ ترین

مری سانحے میں خاندان سمیت جاں بحق ہونے والے اے ایس آئی کے صحافی کزن کو اداروں نے اٹھا لیا

7 جنوری کی خونی شب مری میں بائیس افراد کی جان لے گئی جس میں ایک اے ایس آئی کا بدقسمت خاندان بھی شامل تھا جس کے آٹھ افراد برف میں پھنسی گاڑی میں میں جاں بحق ہوگئے تھے۔ اس واقعے پر ہر کسی میں شدید غم و غصہ پایا جاتا تھا جب کہ ہر کوئی اے ایس آئی نوید کے خاندان کے غم میں برابر کا شریک تھا اور حکومت کی نا اہلی کو ہر جانب سے تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ لیکن اب اسی خاندان کے حوالے سے ایک اور افسوسناک خبر آئی ہے ہے جس کے مطابق اس بدقسمت خاندان کی آزمائش میں ریاست اور حکومت کمی لانے پر تیار نہیں۔ تازہ ترین اطلاعات کے مطابق اب جاں بحق آے ایس آئی کے صحافی کزن طیب گوندل کو کو قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے اٹھا لیا گیا ہے۔ مبینہ طور پر ان کی بہن کی ویڈیو اس وقت سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جس میں وہ کہتی ہوئی پائی جا رہی ہیں ہیں کہ ان کے بھائی کو اس معاملے پر بولنے پر دھمکیاں دی جارہی تھی اور انہیں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے سمجھایا گیا تھا کہ وہ سانحہ مری کے حوالے سے خاموش رہے ورنہ انجام اچھا نہ ہوگا۔ جس کے بعد اب انہیں باقاعدہ طور پر اٹھا لیا گیا ہے۔ انہوں نے وزیراعظم پاکستان، وزیر اعلی پنجاب اور ڈی جی آئی ایس آئی آئی سے اپیل کی ہے کہ وہ اس معاملے میں میں اس خاندان کی کی مدد کریں کیونکہ وہ پہلے ہی پہاڑ جیسے صدمے سے سے دوچار ہیں انہیں مزید اذیت نہ دی جائے یاد رہے کہ طیب گوندل وہی شخص ہیں جن سے مرحوم اے ایس آئی نوید نے مری میں پھنسے ہوئے آخری بار کال پر بات کی تھی اور وہ کال وائرل ہو گئی تھی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button